Piyar Ke Afsanay Mei

0
827

پیار کے افسانے میں

خُدا جانے کون سی کثر رہے گئی اُسے چاہنے میں
دل کے ارمان تک جلا دیئے اُسے پانے میں

خیال سے بھی خیال نہ آیا کبھی کسی اور کا
اتنا پیار تھا اُس کے لیئے دل کے آشیانے میں

زندگی بھر تنہاہ رہا جس کے لیئے تنہایوں میں
اُسے تھوڑا سہ بھی درد نہ ہوا میرا دل جلانے میں

اور کیا بتاہوں اپنی عاشقی کا عالم فہیم
سب کچھ پاہ کے بھی کچھ نہ ملا اس پیار کے افسانے میں

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here