کاش یہ تعمیر مکمل نہ ہو

0
191

کاش یہ تعمیر مکمل نہ ہو

حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کے دور خلافت میں جب مسجد نبوی کی تعمیر شروع ہو گئی تو حضرت کعب احبار رضی اللہ عنہ فرمایا کرتے تھے: ’’کاش یہ تعمیر مکمل نہ ہو۔‘‘ اگر ایک طرف سے مکمل ہو تو دوسری طرف سے گر جائے لوگوں نے دریافت کیا، آپ ایسی بات کیوں کہتے ہیں؟ جب کہ آپ خود حدیث بیان کرتے ہیں کہ مسجد نبوی میں ایک نماز کا ثواب دوسری مسجد کی ایک ہزار نمازوں سے افضل ہے؟ انہوں نے جواب دیا! بیشک میرا اب بھی یہی عقیدہ ہے لیکن میں یہ بات اس لئے کہتا ہوں کہ اس عمارت کے مکمل ہونے پر مسلمانوں پر ایک فتنہ نازل ہوگا کہ اس کے اور زمین کے درمیان ایک بالشت سے زیادہ فاصلہ نہ ہوگا اور وہ فتنہ اس تعمیر تک رکا ہوا ہے، لوگوں نے کعب احبار رضی اللہ عنہ سے پوچھا وہ کون سا فتنہ ہو گا؟ انہوں نے کہا اس شیخ یعنی حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کا قتل ہونا؟ ان کی یہ بات سن کر کسی نے پوچھا کیا حضرت عثمان حضرت عمر رضی اللہ عنہ کی طرح قتل کئے جائیں گے؟

تاریخ حرمین شریفین ص۱۶۰ج۲ بحوالہ حزب القلوب

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here