Koi Ghari ho gi urdu Poetry

0
202

Koi Ghari ho gi Ya Rab Jo meri bhi dua Qabool Ho gi Umeed Urdu Poetry by Tabinda Jabeen 

کوئی تو گھڑی ہوگی،
یا رب
جو میری بھی دعا قبول ہوگی،
اُمید تیری باندھ کر

تجھ سے تیری دوستی کی تمنعہ کرو گی،
ساری خوشیاں جو کہی اندھیرے میں چھپ گئی ہے

اُجالا بن کے طلوع ہوگی
اُمیدوں کا دیا

روشن میری زمین ہوگا
ساری منزل کے راستہ،
خود پہ خود ہموار ہونگے

ازقلم :تابندہ جبیں 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here