Main Nafraton k Jahan mein Reh kar

0
409

Main Nafratoon k jahan main reh kar urdu Ghazal by Mohsin Naqvi

غزل

میں نفرتوں کے جہاں میں رہ کر، جدا رھوں گا تو کیا کروں گا..؟؟
یہ ٹھیک کہتے ہو بیوفا ہوں، وفا کروں گا تو کیا کروں گا..؟؟

..بس ایک تو ہی تو رہ گیا ہے، جہاں سارا تو کھو چکا ہوں
تجھے بھی اپنی انا میں آ کر، خفا کروں گا تو کیا کروں گا..؟؟

..ہزار سجدے تو کر چکا ہوں قضا تمہاری محبتوں میں
میں اب دکھاوے کا کوئی سجدہ ادا کروں گا تو کیا کروں گا..؟؟

..بغیر پانی بھی کوئی مچھلی، بھلا کبھی رہ سکی ہے زندہ
میں تجھ کو کھو کر، کسی کا ہو کر، بتا کروں گا تو کیا کروں گا.. ؟؟

محسن نقوی

Ghazal

Mein Nafratoon k Jahan main reh kar, Juda rahoon ga tu kya karoon ga
Yeh thik kehty ho bewafa hun, wafa karoon ga tu kia karoon ga???

Bas aik tu he to reh gaya hai Jahan sara kho chuka hoon
Tujhe bhi apni anaa mein aa kar khafa karoon ga tu kya karoon ga???

hazaar sajde tu kar chuka hoon Qaza Tumhari mohabatoon main
Mein ab dekhaway ka koi sajda, adaa karoon ga tu kya karoon ga

Baghair pani bhi koi machli, Bhala kabhi reh saki hai zinda??
Mein tujh ko Kho kar, kisi ka ho kar, Bata karoon ga tu kia karoon ga….!!!!

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here